اٹلی، قرنطینہ میں نرس نے کرونا کا شکار دوشیزہ کو کیوں قتل کر دیا؟

سسلی (جیٹی نیوز)اٹلی کے ایک ہسپتال میں فرنٹ لائن پر کرونا کے مریضوں کی دیکھ بھال کرنے والی ایک نرس نے ہسپتال کے ڈاکٹر کی 27 سالہ گرل فرینڈ لورینا کا گلا گھونٹ کر اسے موت کے گھاٹ اتار دیا۔پولیس نے 28 سالہ قاتل نرس ڈیپیس کو گرفتار کر لیا ہے جس نے دوران تفتیش روتے ہوئے بتایا کہ ڈاکٹر کی گرل فرینڈ کرونا وائرس کا شکار تھی اور اسی نے مجھے کرونا وائرس منتقل کیا اسلئے میں نے اس کا گلا گھونٹ کر اسے مار ڈالا اور اس کی کلائی بھی کاٹ ڈالی ۔بتایا گیا ہے کہ 27 سالہ خاتون لورینا کرونا وائرس کا شکار تھی اور قرنطینہ میں تھی جہاں وہ مردہ حالت میں پائی گئی ۔ ڈاکٹر انٹونیو ڈی پاس نے پولیس کو فون کر کے بتایا کہ ہسپتال کی نرس نے اس کی گرل فرینڈ کا قرنطینہ میں قتل کر دیا ہے۔

یہ واقعہ سسلی کے ہسپتال میں پیش آیا ہے۔ ڈیپیس کرونا وباء کیخلاف فرنٹ لائنز پر کام کر رہی تھی، 28 سالہ قاتل نرس نے تفتیش کرنیوالے اہلکاروں کو بتایا کہ اس نے قرنطینہ میں لورینا کا قتل کیا ہے۔ پولیس نے قرنطینہ اپارٹمنٹ کے فرش پر خاتون کو مردہ حالت میں پایا۔28 سالہ نرس نے اس کی کلائی بھی کاٹ ڈالی تھی۔نرس کے مطابق وہ ڈاکٹر کو مار دینا چاہتی تھی لیکن خوش قسمتی سے وہ بچ گیا۔ پولیس کے مطابق بتایا وہ ایک ایسی مسیحا نرس تھی جو دوسروں کو بچانے کے لئے سخت محنت کر رہی تھی۔ یہ ایک عجیب انسانی المیہ ہے۔ اٹلی میں کرونا وائرس کی وبا ءسے ابتک 41 ڈاکٹروں کی موت واقع ہوچکی ہے۔

Professional women jtnonline2

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.