کتوں کے لاہور ،کراچی میں لڑکیوں پر حملے لاک ڈاﺅن نے انتہائی بدتمیز بنا دیا

لاہور،لاڑکانہ( جیٹی نیوز)پنجاب اور سندھ کے گنجان علاقوں میں لاک ڈاﺅن سخت ہونے سے محلوں میں آوارہ کتوں کی تعداد اور بدتمیزیوں کو بڑھا دیا ہے ۔وہ سار دن سوتے اور شام ڈھلتے ہی سڑکوں پراپنی معمول کی زندگی سے ہٹ کر فطرت کے مطابق خونخوارکتے بن کر نکل آتے ہیں ۔حیرانی سے خالی سڑکیں پا کر خود کو اس قدر آزاد سمجھتے ہیں کہ ایک کتا دوسر اکتے پر خامخواہ بھونکنا شروع کر دیتا ہے،کوئی راہگیر رات آٹھ کے بجے کے بعد اگر موٹر سائیکل پر جا رہا ہو تو اسے اکیلا جان کر جھپٹ پڑتے ہیں۔کئی راہگیر لاک ڈاﺅن کے دوران کتوں کی ان حرکتوں کی وجہ سے زخمی ہو چکے ہیں ۔لاہور کی انفنٹری روڈ جو کہ حساس ایریا ہے ،موٹر سائیکل نوجوان گر کر شدید زخمی ہو گیا ،کتوں کا گروہ جو آپس میں لڑ رہا تھا، موٹر سائیکل سوار کو تنہا پا کر متحد ہو گیا اور اس بیچارے کے پیچھے دوڑ لگا دی۔

جسامت میں سب سے بڑا ایک کتا دوڑ میں بہت تیز تھا اس نے موٹر سائیکل سوار کی ٹانگ پر کاٹنا چاہا تو اس بیچارے نے ٹانگیں اٹھا دی جس سے اس کی موٹر سائیکل سلپ ہو کر پھسل گئی اور وہ شدید زخمی ہو گیا۔ اس سے ملحقہ جدید قصبوں کا تو برا حال ہے ،کتے کسی کو بھی خالی ہاتھ جانے نہیں دیتے علاقے میں گشت کرنیوالی فورسز اس صورتحال کا فائدہ اٹھا رہی ہیں،شہریوں کو گھر تک ہی محدود رکھا جائے ،جان بوجھ کر کتوں کی نسل کشی کیلئے اقدامات نہیں کئے جا رہے ہیں اور کتو باعث شہری جو پہلے ہی کرونا کا خوف کھائے ہوئے ہیں انہیں ہو کے عالم میں وحشت ہونے لگی ہے۔کوئی راہگیر گزر رہا ہو وہ اسے دبوچ لیتے ہیں۔کراچی ،حیدرآباد کے مکینوں کیلئے آوارہ کتے عذاب بن چکے ہیں اور کوئی بھی اس کا نوٹس لینے والا نہیں۔ ادھرلاڑکانہ کے قریب دھامراہ گادانی میں مسجد سے آنے والی 8 سالہ بچی انوشہ کو آوارہ کتے نے بازو¿ پر کاٹ کر شدید زخمی کردیا۔

بچی کی چیخ و پکار پر علاقہ مکینوں نے پہنچ کر بچی کو کتے سے بچایا اور اس بچی کے والدین کو کو اطلاع دی جس پر ورثادوڑتے ہوئے آئے اور اپنی بچی کو فوری علاج کیلئے چانڈکا ہسپتال کے شعبہ حادثات میں منتقل کر دیاجہاں اسے سگ گزیدگی کی ویکسین فراہم کی گئی۔ ورثا کے مطابق بچی انوشہ گاو¿ں کے مسجد میں دینی تعلیم حاصل کرتی ہے جو سبق لینے کے لیے مسجد جارہی تھی کہ راستے میں آوارہ کتے نے اس کے بازو¿پر کاٹ لیا۔عوام نے مطالبہ کیا کہ لاڑکانہ شہر اور آس پاس کے علاقوں میں کتا مار مہم شروع کرکے معصوم بچوں کی زندگیاں بچائی جائیں۔ ایک روز قبل کھوسہ گاوں میں آوارہ کتوں نے 6 سالہ بچے ظہیر کو نوچ ڈالا جس کے باعث وہ دم توڑ گیا۔

shame less women jtn1

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.