کروناجن “ کا کمال،برگر خورموٹی لڑکیاں سبزی نوڈلز کھانے لگ گئیں خواتین دبلی

نیویارک(جیٹی نیوز)امریکہ کے معروف اخبار نے ایک تازہ آن لائن سروے میں دلچسپ انکشاف کیاہے کہ کورونا وباءکے باعث جاری لاک ڈاﺅن سے گھروں میں رہنے پر مجبور خواتین کا وزن بڑھنے کی بجائے کم ہو گیا ہے اور بہت سی خواتین جو کولیسٹرول اور جملہ امراض معدہ میں مبتلا تھیں ان کی شکایات بھی کم سننے میں آئی ہیں۔تحقیق کے مطابق وہ خواتین جو دفاتر آتی جاتی تھیںیا پھر دکان کا کاروبار چلاتی تھیں ،وہ دوپہر کا کھانا ہمیشہ باہر سے کھاتی تھیں جو کہ زیادہ تر برگرزاور فرائیڈ چپس پر مشتمل ہوتا تھا۔

اسی خوراک کے باعث انہیں آئے دن بدہضمی کا سامنا کرنا پڑتا تھا۔سروے کے مطابق گھر بیٹھے افراد نے اپنے مقامی علاقے کی ہیلتھ ٹیم سے زیادہ تر نزلہ اور بخار کی علامات بتا کر دوائی لی،معمول سے ہٹ کر عوام کی اکثریت نے ذہنی دباﺅ ختم کرنے کے بارے میں بھی ایڈوائز لی اور میڈیسن لکھوائی۔بہت کم خواتین نے شکایت کی کہ انہیں بدپرہیضی ہے یا پھر ان کا کولیسٹرول لیول بڑھ گیا ہے۔اخباری سروے میں گھر بیٹھی خواتین سے ان کی روزمرہ خواراک کے بارے میں پوچھا گیا تو انہوں نے بتایا کہ وہ گھر میں ہی سبزی یا پھر نوڈلز پر گزارہ کرتی ہیں۔

آرڈر پر فوڈ منگوانا کرونا وائرس کے باعث قابل اعتبار نہیں رہا اور ویسے بھی لاک ڈاﺅن کے باعث ایسا ممکن نہیں رہا،کوئی بھی بڑی فوڈ چین ڈلیوری سہولت فراہم نہیں کر رہی۔خواتین نے اس حوالے سے بتایا کہ وہ بچے جنہیں صرف میکڈونلڈ اور کے ایف سی ہی کھانا تھا وہ بھی اعتدال کی راہ پر لگ گئے ہیں اور کرونا کے خوف سے باہر کی چیزیں کھانے کا سوچتے بھی نہیں،گھر میں ہی سبزیاں اور نوڈلز کھا کر گزارہ کر رہے ہیں۔ماﺅں کے مطابق بچوں کی باہر گھومنے ایسی بری عادات بھی ختم ہو کر رہ گئی ہیں۔

hot jtn2

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.