ماسک دستانے پہننے سے لڑکیوں اور نرسوں کو الرجی،خارش پڑ گئی

ملبورن( جیٹی نیوز) کرونا نے جہاں مردوں کو اپنا شکار بنایا ہے تو وہاں گھر بیٹھی دوشیزاوں کو بھی تگنی کا ناچ نچا دیا۔ نرسیں ہوں،لیڈی ڈاکٹرز ہوں یا پھر طالبات ،اتنی مرتبہ ساری زندگی ہاتھ نہیں دھوئے ہو نگے جتنا پانچ ماہ میں دھونے پڑ گئے ہیں لیکن اس کا نتیجہ یہ ہوا کہ سینی ٹائزر سے ہاتھوں ،چہروں اور آنکھوں میں الرجی کی شکایات بڑھ گئیں۔بہت سی لڑکیوں کو الرجی کی دوائی کھانا پڑ گئی جبکہ نرسوں کو خارش پڑ گئی ہے۔سینیٹائزر کے استعمال سے آنکھوں میں جلن ہوتی ہے۔ہاتھ یا بازو جیسے ہی خشک ہوتے ہیں ان پر خارش ہونے لگتی ہے۔

لڑکیوں کی جلد چونکہ نازک ہوتی ہے جبکہ ایک ہزار سینی ٹائزر کی مقدار میں 750 گرام الکحل بھی شامل ہوتی ہے، جس کے باعث جلد خشک در خشک ہوتی چلی جا رہی ہے۔بعض لڑکیاں تو چوبیس گھنٹے میں 15،15 مر تبہ ہاتھوں کو سینی ٹائزر سے دھو رہی ہیں ،نازک اندام لڑکیوں کی کہنیوں تک الرجی کی شکایات بڑھ چکی ہیں۔ آنکھوں میں جلن بھی ہوتی ہے، کچھ کو خشک خارش بھی رہنے لگی ہے۔ ماہرین جلد نے مشورہ دیا ہے کہ سینیٹائزر کا استعمال دن میں صرف دو سے تین مرتبہ کیا جائے تا کہ ان کی جلد مزید خشک ہونے سے بچ جائے۔

برطانیہ میں کرونا وائرس کےخلاف ہسپتال میں نبرد آزما ایک بہادر نرس نے مقامی اخبار کو روتے ہوئے اپنی بپتا سنائی اور بتایا کہ کس طرح13 گھنٹے کام کرنا پڑتا ہے۔ماریا نامی نرس لندن کے رائل برومٹن ہسپتال میں اپنی خدمات سرانجام دے رہی ہے۔وہ 13 گھنٹے ڈیتھ وارڈ یعنی کرونا کے مریضوں پر مشتمل انتہائی نگہداشت وارڈ میں بھی بھی کام کرتی ہے۔ماریہ نے بتایا کہ یوں محسوس ہوتا ہے کہ وہ حقیقی طور پر میدان جنگ میں اتر آئی ہے۔

اس نے کہا کہ یہ کیسے ممکن ہے کہ ایک عورت 13 گھنٹے مسلسل ماسک پہنے رکھے اور دستانے چڑھائے رکھے،یہ اتنا آسان نہیں ہے جتنا سمجھا جا رہا ہے۔ماریہ کے مطابق اس کی ساتھی تمام نرسوں کو خارش پڑ چکی ہے اور انہیں الرجی کا بھی سامنا ہے۔گھروں سے باہر نکلنے والے لوگ چند گھنٹے بھی مسلسل ماسک اور دستانے نہیں پہن سکتے وہ تو ایک کمزور سی عورت ہے اور اس کیساتھ یہ بہت بڑی نا انصافی ہے۔نرس نے روتے ہوئے بتایا کہ مسلسل احتیاطی تدابیر اور لباس نے اسے ذہنی مریض بنا دیا ہے۔ گھر آتے ہی وہ بےہوش ہو جاتی ہے۔اس کے ناک ، کانوں اور ہاتھوں پر سرخ نشانات ابھر آئے ہیں اور ان پر خارش ہوتی ہے ۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.